دنیا

اقوام متحدہ کی یمن میں سعودی اتحاد کی جارحیت کی مذمت

شیعت نیوز : یمن کے امور میں اقوام متحدہ کے خصوصی نمائندے نے جمعرات کے روز یمن کے صوبے الجوف میں سعودی اتحاد کی جارحیت کی کہ جس میں کئی یمنی منجملہ متعدد بچے شہید و زخمی ہوئے تھے، شدید الفاظ میں مذمت کی۔

العالم کی رپورٹ کے مطابق یمن کے امور میں اقوام متحدہ کے خصوصی نمائندے مارٹین گریفٹس(Martin Griffiths ) نے یمن کے صوبے الجوف میں سعودی اتحاد کے جنگی طیاروں کے حملے کی مذمت کرتے ہوئے فوری طور پر اس کی تحقیقات کرانے کا مطالبہ کیا۔

واضح رہے کہ یمن کے صوبے الجوف کے خب والشعف کےعلاقے پر جارح سعودی اتحاد کی جارحیت میں 9 یمنی شہید اور 12 زخمی ہوئے۔ شہید اور زخمی ہونے والوں میں زیادہ تر بچے اور خواتین شامل ہیں۔

یہ بھی پڑھیں : محمد بن سلمان اپنے ایک مخالف سعد الجبری کو کینیڈا میں قتل کرانا چاہتا تھا۔

اس سے قبل جون کے مہینے میں بھی سعودی جنگی طیاروں نے صوبہ الجوف کے الحزم شہر میں ایک شادی کی تقریب پر بمباری کر دی تھی جس کے نتیجے میں پینتیس یمنی شہید ہو گئے تھے۔ یہ حملہ اس قدر دردناک تھا کہ یمنی قبائل نے اس کے بعد سعودی دشمن سے انتقام لینے کا عہد کیا تھا۔

مئی میں جنگ بندی معاہدے کے اختتام کے بعد سے بھکمری و بیماری سے تنگ آ چکے یمن پر آل سعود اور اس کے اتحادیوں کے حملوں میں مزید شدت آ گئی ہے اور ملک میں کورونا کے پھیلاؤ کے باوجود ان کے وحشیانہ حملے جاری ہیں۔

خیال رہے کہ یمن کو مارچ دوہزار پندرہ سے مغربی و یورپی ممالک کے حمایت یافتہ سعودی اتحاد کی سمندری فضائی اور زمینی جارحیت کا سامنا ہے جس کے سبب ملک کا تمام انفراسٹرکچر تباہ ہو کر رہ گیا ہے اور دسیوں لاکھ یمنیوں کو بے پناہ مصائب و آلام اور ناگفتہ بہ مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ اب تک دسیوں ہزار یمنی شہری شہید و زخمی ہو چکے ہیں۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close