اہم ترین خبریںپاکستان

وی سی اردویونیورسٹی کا یزیدی کردار یوم حسینؑ پر پابندی عائد کردی،آئی ایس او کے کارکنان گرفتار

امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن پاکستان کراچی ڈویژن کےصدر محمد عباس نے کہاکہ وائس چانسلر ڈاکٹر الطاف حسین نے عزاداری سیّد الشہداء پر پابندی عائد کرکے یزیدی آلہ کار ہونے کا واضح ثبوت دیا ہے

شیعت نیوز: عزاداری سیّدالشہداء(یوم حسینؑ) پر پابندی کے خلاف احتجاج جرم بن گیا، پولیس نے کلاسز سے نکال کر درجنوں شیعہ طلباء کو گرفتار کرلیا۔آئی ایس او پاکستان کراچی ڈویژن بے گناہ شیعہ طلباء کی گرفتاریوں اور انہیں تشدد کا نشانہ بنانے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتی ہے۔پولیس نے بے گناہ شیعہ طلباء کو جامعہ سے گرفتار کرکے وائس چانسلر کی غلامی کا ثبوت دیا ہے،ان خیالات کا اظہار امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن پاکستان کراچی ڈویژن کےصدر محمد عباس نے میڈیا کو جاری بیان میں کیا۔

انہوں نے کہاکہ وائس چانسلر ڈاکٹر الطاف حسین نے عزاداری سیّد الشہداء پر پابندی عائد کرکے یزیدی آلہ کار ہونے کا واضح ثبوت دیا ہے، اگر ہمارے جوانوں کو فی الفور رہا نہ کیا گیا ہم احتجاج کریں گے جو ہر پاکستانی کا آئینی و قانونی حق ہےگزشتہ روز وائس چانسلر کے حکم پر یونیورسٹی انتظامیہ نے آئی ایس اوکراچی ڈویژن کے عہدیداروں کو جبری طور پر قید کرنے کی بھی کوشش کی جسے طلبا کی نعرے بازی و مداخلت نے ناکام بنادیا۔یونیورسٹی انتظامیہ بالخصوص آصف رفیق،(پروگرام انچارج)، آصف علی(کیمپس انچارج) اور جامعہ کے سیکیورٹی اہلکاروں نے شیعہ جوانوں اور ڈویژنل عہدیداران کو تشدد کا نشانہ بھی بنایا اور ان کے خلاف جھوٹی ایف آئی آر بھی کاٹ دی گئی جس کے خلاف قانونی چارہ جوئی کی جائے گی۔

یہ بھی پڑھیں: آئی ایس او کے تحت بہائوالدین زکریا یونیورسٹی ملتان میں یوم حسین ؑ کا فقید المثال انعقاد

محمد عباس نے مزیدکہاکہ پولیس نے یوم حسینؑ پر پابندی کےخلاف احتجاج کرنے والے جوانوں کو تھانے لےجاکر تشدد کا نشانہ بنارہی ہے سن لے انتظامیہ عزاداری سیّد الشہداء پر پابندی کسی صورت قبول نہیں، کل یوم حسینؑ لازمی منعقد ہوگا، وائس چانسلر الطاف حسین رقص و سرور کی محفلوں کا انعقاد کو بڑے جذبے سے کرتے ہیں لیکن یوم مصطفیٰؐ اور یوم حسین ؑپر پابندی عائد کرتے ہیں جو ان کے یزید زمان ہونے کا واضح ثبوت ہے۔

انہوں نے کہاکہ اردو یونیورسٹی اسلام آباد کیمپس کے ڈپٹی رجسٹرار اور کراچی کیمپس کی انتظامیہ نے احتجاج کرنے والے جوانوں کو بھیانک نتائج کی دھمکیاں دی ہیں جس کے ثبوت موجود ہیں۔ اگر کسی بھی جوان کو نقصان پہنچا اس کی ذمہ دار ڈپٹی رجسٹرار شاہ جی محمد(اسلام آباد) رجسٹرار ڈاکٹر صارم، انچارج پروگرام آصف رفیق اور وائس چانسلر الطاف حسین ہوں گے۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close