دنیا

ونزوئیلا کے صدر نے یورپی یونین کے نمائندے کو ملک بدر کر دیا

شیعت نیوز : ونزوئیلا کے صدر نکولس میدورو نے یورپی یونین کی طرف سے 11 ونزوئیلائی شہریوں پر پابندیوں کے بعد ونزوئیلا میں یورپی یونین کے نمائندے کو ملک بدر کرنے کا حکم صادر کردیا ہے۔

فارس خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق ونزوئیلا کے صدرنکولس مادورو نے یورپی یونین کی طرف سے ونزوئیلا کی 11 شخصیات پر پابندیاں عائد کئے جانے پر سخت رد عمل ظاہر کرتے ہوئے ونزوئیلا سے یورپی یونین کے نمائندے کو ملک بدر کرنے کا حکم جاری کردیا ۔

ونزوئیلا کے صدر نے یورپی یونین کے نمائندے کو 72 گھنٹوں میں ونزوئیلا چھوڑنے کا حکم دے دیا ہے۔ ونزوئیلا کے صدر نے کہا ہے کہ اگر یورپی یونین ونزوئیلا کے شہریوں کا احترام نہیں کرے گا تو ونزوئیلا بھی ان کا احترام نہیں کرے گا۔

یہ بھی پڑھیں : لبنان، سید حسن نصراللہ کے خلاف بیان دینے پر امریکی سفیر پر ایک سال کی پابندی عائد

واضح رہے کہ امریکہ اور اس کے اتحادی من جملہ یورپی یونین نے گزشتہ مہینوں کے دوران ونزوئیلا کی حکومت کے مخالفین کی حمایت سے ونزوئیلا کے صدر نکولس مادورو کی حکومت کے خلاف کودتا کرنے کی کوشش کی جو ناکامی سے دوچار ہوئی۔

دوسری جانب امریکی صدر ٹرمپ نے ونزوئیلا کے بارے میں ایک بار پھر اپنے موقف سے پسپائی اختیار کی۔

رپورٹ کے مطابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اس بار ونزوئیلا کے صدر نکولس مادورو کو دھمکی دینے کے بجائے ان سے ملاقات کرنے کی خواہش کا اظہار کیا ہے۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ونزوئیلا کے حزب اختلاف کے رہنما خوان گوآئیدو پر عدم اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ وہ ونزوئیلا کے صدر نکولس مادورو سے ملاقات کرنا چاہتے ہیں۔

واضح رہے کہ امریکہ اور ونزوئیلا کے درمیان کشیدگی کا آغاز اس وقت ہوا تھا جب واشنگٹن کے حمایت یافتہ حزب اختلاف کے رہنما خوان گوآئیدو نے اپنے خودساختہ صدر ہونے کا علان کیا تھا اور امریکہ نے اس کی بھر پور حمایت کی تھی۔

جس کے بعد ونزوئیلا کے صدر اور دیگر اعلی حکام نے اپنے ملک کے اندرونی معاملات میں امریکی مداخلت پر شدید ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا تھا کہ کاراکاس حکومت کے خلاف بغاوت کی امریکی سازش بری طرح ناکام ہو گئی ہے۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close