اہم ترین خبریںپاکستان

یزید کے حامی مفتی منیب الرحمٰن کی سربراہی نامنظور، شیعہ علماءنےعلیحدہ رویت کمیٹی بنالی

تفصیلات کے مطابق مرکزی اور صوبائی روئیت ہلال کمیٹیوں کے شیعہ ممبران کا ویڈیو لنک اجلاس لاہور کے ادارہ منہاج الحسین میں منعقد ہوا

شیعیت نیوز: یزید ابن معاویہ لعین کے حامی ملعون مفتی منیب الرحمٰن کی سربراہی کے خلاف رویت ہلال کمیٹی کے شیعہ اراکین نے علیحدہ رویت ہلال کمیٹی بنانے کا اعلان کردیا، صدر پاکستان، وزیر اعظم پاکستان اور وفاقی وزیر مذہبی امور سے مفتی منیب الرحمٰن کی جگہ کسی غیر متنازعہ شخصیت کو رویت ہلال کمیٹی کا چیئرمین مقرر کیئے جانے تک مرکزی رویت ہلال کمیٹی کے تمام اجلاسوں کے بائیکاٹ کا فیصلہ

تفصیلات کے مطابق مرکزی اور صوبائی روئیت ہلال کمیٹیوں کے شیعہ ممبران کا ویڈیو لنک اجلاس لاہور کے ادارہ منہاج الحسین میں منعقد ہوا جس میں اراکین مرکزی و صوبائی روئیت ہلال کمیٹیز ڈاکٹر علامہ محمد حسین اکبر لاہور پنجاب، علامہ سید افتخار حسین نقوی اسلام آباد، علامہ محمد جمعہ اسدی کوئٹہ بلوچستان، علامہ سید ارشاد حسین نقوی میرپور خاص سندھ، علامہ محمد افضل حیدری لاہور پنجاب، علامہ سید فخر الحسن کراروی پشاور اور علامہ علی کرار نقوی کراچی سندھ سے شریک ہوئے۔

یہ بھی پڑھیں: کراچی، شیعہ جوانوں کااغواء، حکومت اختیار کا ناجائز استعمال کرنے والے اداروں کے اہلکاروں کو لگام دے،علامہ باقرزیدی

مرکزی اور صوبائی روئیت ہلال کمیٹیوں کے شیعہ ممبران نے اعلان کیا کہ مرکزی روئیت ہلال کمیٹی کا بائیکاٹ جاری رہے گا۔ آج ہونے والے روئت ہلال کے صوبائی اور مرکزی کمیٹیوں کے اجلاس میں کوئی بھی شیعہ ممبر اس وقت تک شریک نہیں ہوگا جب تک متنازع چیئرمین روئیت ہلال کمیٹی مفتی منیب الرحمن کو اس منصب سے ہٹا کر کسی دوسرے معتدل محب اہلبیت(ع) عالم کو چیئرمین نامزد نہیں کر دیا جاتا۔

اجلاس میں متفقہ طور پر اپنے سابقہ بائیکاٹ کے فیصلے کو برقرار رکھتے ہوئے صدر پاکستان، وزیر اعظم پاکستان اور وفاقی وزیر مذہبی امور سے مطالبہ کیا کہ شیعہ سنی تمام مکاتب فکر کے علماء اور قومی اسمبلی کے معزز ممبران کے متفقہ مطالبہ کو پورا کرتے ہوئے 18 سال سے مرکزی روئیت ہلال کمیٹی کی چئیرمین شپ کی سیٹ پر براجمان مفتی منیب کو ہٹا کر فوری طور پر نیا چیئرمین نامزد کیا جائے۔

یہ بھی پڑھیں: ایک بار پھر بیلنس پالیسی کے تحت ایک ہی گھرکے 4افراد سمیت متعدد شیعہ جوان کراچی سے جبری طور پر لاپتہ

جب تک ہمارا یہ مطالبہ منظور نہیں کر لیا جاتا ہمارا بائیکاٹ جاری رہے گا۔ اجلاس میں پاکستان بھر کے مومنین اور علماء سے یہ درخواست کی گئی کہ شیعہ رویت ہلال کمیٹی کے اراکین کیساتھ چاند نظر آنے یا نہ آنے کی خبر دینے اور خبر لینے کیلئے رابطے میں رہیں جن کا مشترکہ اجلاس غروب آفتاب سے آدھ گھنٹہ پہلے ادارہ منھاج الحسین جوہر ٹاؤن لاہور میں شروع ہوگا۔ اجلاس کے آخر میں چاند ثابت ہونے یا نہ ہونے کا اعلان کیا جائے گا۔

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close