یمن

یمن کے مفرور صدر کے متعدد فوجی ہلاک و زخمی، سعودیہ کی یمنی شہروں پر بمباری

شیعت نیوز: یمن کے مفرور صدر منصور ہادی سے وابستہ متعدد فوجی ہلاک و زخمی ہو گئے ہیں۔ یمنی ذرائع کا کہنا ہے کہ سعودی عرب کے اتحادی افواج نے یمن کے مختلف شہروں پر وحشیانہ بمباری کی ہے۔

یمن کی فوج اور عوامی رضا کار فورسز نے صوبہ مآرب کے المخدرہ علاقے پر یمن کے مفرور صدر منصور ہادی کے آلہ کار فوجیوں کے خلاف کارروائی کرتے ہوئے 3 فوجیوں کو ہلاک اور 5 کو زخمی کردیا۔ اس کارروائی میں آل سعود کے آلہ کار فوجیوں کو کافی نقصانات کا سامنا کرنا پڑا اوروہ فرار کر گئے۔

دوسری جانب المسیرہ نیوز نے خبر دی ہے کہ سعودی جنگی طیاروں نے یمن کے صوبہ مآرب کے ۔مجزر علاقے پر دو مرتبہ، صرواح کے علاقے نجد العتق پر 8 مرتبہ، مدغل الجدعان علاقے پر 6 مرتبہ، صوبہ صعدہ کے علاقے کتاف پر 4 مرتبہ، صوبہ حجہ کے علاقے حیران پر 3 مرتبہ اور صوبہ الجوف کے علاقوں المطمہ اورخب و الشعف پر 3 مرتبہ بمباری کی۔

یہ بھی پڑھیں : ریاض میں ڈونرز کانفرنس کے شرکاء مجرموں کے جھانسے میں نہ آئیں۔ انصار اللہ

واضح رہے کہ ابھی تک ان حملوں میں جانی اور مالی نقصانات کی رپورٹ سامنے نہیں آئی۔

سعودی اتحاد نے نو اپریل کو یمن کے خلاف جنگ بندی کا یک طرفہ اعلان کرتے ہوئے دعوی کیا تھا کہ کورونا کے خلاف مہم میں مدد کی غرض سے یمن کے خلاف ہر قسم کے زمینی اور فضائی حملے بند کر دیئے گئے ہیں اور اس کا خیر مقدم کیے جانے کی صورت میں جنگ بندی میں مزید توسیع بھی کی جاسکتی ہے۔ تاہم سعودی اتحاد نے اپنی ہی اعلان کردہ جنگ بندی کے آغاز کے تھوڑی ہی دیر بعد یمن پر جارحیت دو بارہ شروع کردی تھی۔

سعودی اتحاد نے دوہفتے کے بعد ایک بار پھر دعوی کیا تھا کہ یمن کے خلاف یک طرفہ جنگ بندی کی مدت میں مزید ایک ماہ کی توسیع کردی گئی ہے۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close