اہم ترین خبریںیمن

یمن کے مختلف علاقوں میں سعودی اتحاد کی چند گھنٹوں میں کئی بار بمباری

شیعت نیوز : سعودی اتحاد کے جنگی طیاروں نے گزشتہ چوبیس گھنٹے کے دوران یمن کے مختلف علاقوں کو کئی بار اپنی وحشیانہ بربریت کا نشانہ بنایا۔

المسیرہ ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق سعودی اتحاد کے جنگی طیاروں نے یمن کے مختلف صوبوں من جملہ حجہ، صعدہ اور مآرب کے رہائشی علاقوں پر شدید حملے کئے جن کے نتیجے میں رہائشی مکانات اور متعدد بنیادی تنصیبات تباہ ہو گئیں۔

سعودی اتحاد کے جنگی طیاروں نے گزشتہ روز مغربی یمن کے صوبے الحدیدہ کے مختلف علاقوں پر حملے کر کے اس صوبے میں جنگ بندی کی 105 مرتبہ خلاف ورزی کی ۔

یمن کی نیشنل سالویشن فرنٹ حکومت کے وزیر اعظم نے ایک بار پھر ملت یمن کے خلاف جنگ کا سلسلہ بند کئے جانے کی ضرورت پر زور دیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں : عراق: صوبے ذی قار میں امریکی فوجی کانوائے کے راستے میں 2 بم دھماکے

یمن کی نیشنل سالویشن حکومت کے وزیر اعظم عبد العزیز صالح بن جبتور نے کہا ہے کہ یمنی قوم سعودی عرب کی وحشیانہ جارحیت جاری رہنے کی وجہ سے کافی تکلیف اور پریشانیاں برداشت کر رہی ہے۔ انہوں نے اس جارحیت کو جلد سے جلد بند کرنے کا مطالبہ کیا۔

بن حبتور نے یمن پر جنگ مسلط کرنے والے بعض پڑوسی ممالک پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ یمنی عوام کے لئے امن ایک بنیادی مطالبہ ہے۔

درایں اثنا المسیرہ ٹی وی نے رپورٹ دی ہے کہ یمن کے نہتے عوام کے خلاف جارح سعودی عرب کے وحشیانہ حملوں کی نئی لہر شروع ہو گئی ہے۔ رپورٹ کے مطابق سعودی عرب نے صرف چند گھنٹوں میں حجہ، صعدہ اور مآرب صوبوں پر کئی بار بمباری کی۔

صوبہ الحدیدہ میں جنگ بندی پر نگرانی کے لئے قائم کنٹرول روم کا کہنا ہے کہ جارح سعودی اتحاد نے ایک سو پانچ بار جنگ بندی کی خلاف ورزی کی ہے۔جنگ بندی کے نگراں کنٹرول روم نے اعلان کیا ہے کہ سعودی اتحاد نے بدھ کو بھی صوبہ الحدیدہ میں ایک سو پانچ بار جنگ بندی کی خلاف ورزی کی اور الجاح ، التحتیا اور الجراحی نامی علاقوں پر ڈرون طیاروں کے ذریعے جاسوس پروازیں انجام دیں۔

انصاراللہ نے کہا کہ جارح سعودی عرب کے جنگی طیارے یمنی بچوں اور عورتوں کو نشانہ بنا رہے ہیں جب کہ ان کے یہ اقدامات بین الاقوامی قوانین کی سخت خلاف ورزی شمار ہوتے ہیں اور ان جرائم کی تمام ذمہ داری جارح قوتوں اور عالمی برادری پر عائد ہوتی ہے۔

دریں اثنا المیادین ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق یمن کی اعلی انقلابی کمیٹی کے سربراہ محمد علی الحوثی نے اپنے ٹوئٹر پیج پر ٹوئٹ کیا ہے کہ سعودی اتحاد نے تیل بردار بحری جہازوں کو روک رکھا ہے جس سے یمن میں انسانی بحران اور زیادہ شدت اختیار کر گیا ہے اور یمنی عوام کی معاشی مشکلات مزید بڑھ گئی ہیں۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close