اہم ترین خبریںیمن

یمن: سعودی اتحاد افواج کی الحدیدہ پر 248 مرتبہ وحشیانہ گولہ باری

شیعت نیوز: سعودی اتحاد افواج نے جمعرات کو ایک بار پھر یمن کے مغربی علاقے الحدیدہ میں فائربندی کی خلاف ورزی کرتے ہوئے رہائشی علاقوں پر گولہ باری کی ہے ۔

رپورٹ کے مطابق سعودی عرب اور اس کے اتحادیوں نے یمن کے مغربی شہر الحدیدہ کے کئی رہائشی علاقوں پر بھاری اور ہلکے ہتھیاروں سے گولہ باری کی جس میں ایک یمنی بچہ شہید ہو گیا۔

یہ بھی پڑھیں : یمنی فوج نے صوبہ الحدیدہ میں سعودی اتحاد کا جاسوس ڈرون کو تباہ کردیا

سعودی اتحاد افواج  نے اسی طرح یمن کے صوبے حجہ کے مختلف علاقوں پر بھی 13 مرتبہ حملے کئے۔ سعودی جارحیت میں ہونے والے جانی اور مالی نقصانات کی تفصیلات سامنے نہیں آسکی ہیں۔

یمن کی مسلح افواج کے ترجمان یحیی السریع نے حال ہی میں اعلان کیا تھا کہ جارح سعودی اتحاد نے الحدیدہ میں فائربندی کے بعد سے اب تک تیس ہزار بار سے زائد جنگ بندی کی خلاف ورزی کی ہے۔

یہ بھی پڑھیں : یمن: صوبہ الجوف میں انصار اللہ کے مجاہدین کی کارروائیاں جاری

اٹھارہ دسمبر دو ہزار اٹھارہ کو اسٹاک ہوم میں یمنی فوج اور جارح سعودی اتحاد کے درمیان الحدیدہ صوبے میں فائربندی پر اتفاق ہوا تھا لیکن جارح سعودی اتحاد نے کبھی بھی اس فائربندی کا احترام نہیں کیا۔

واضح رہے کہ سعودی عرب اور اس کے بعض اتحادی ممالک، امریکہ اور دیگر ملکوں کی حمایت سے مارچ دوہزار پندرہ سے یمن پر وحشیانہ حملے کررہے ہیں اس عرصے میں دسیوں ہزار یمنی شہری شہید اور زخمی ہوگئے ۔ جارح سعودی اتحاد کے وحشیانہ حملوں سے دسیوں لاکھ یمنی شہری بے گھر بھی ہوئے ہیں۔

سعودی محاصرے کی وجہ سے یمن کے عوام کو غذا اور دوا کی شدید قلت کا سامنا ہے۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close