یمن

یمن: سعودی اتحادی افواج کی دارالحکومت صنعا سمیت مختلف علاقوں پر شدید بمباری

شیعت نیوز: سعودی اتحادی افواج کے لڑاکا طیاروں نے یمنی دارالحکومت صنعا پرشدید بمباری کی ہے۔

رپورٹ کے مطابق، یمنی ذرائع کا کہناہے کہ امریکہ اور اسرائیل کے حمایت یافتہ سعودی اتحاد کے لڑاکا طیاروں نے دارالحکومت صنعا کے بین الاقوامی ائیرپورٹ سمیت مختلف علاقوں پر وحشیانہ بمباری کی ہے۔

جارح سعودی اتحادی افواج کے جنگی طیاروں نے گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران یمن کے مختلف علاقوں منجملہ صوبہ البیضاء، مآرب، صنعا،الجوف اور صعدہ پر جارح سعودی اتحادی افواج  کے جنگی طیاروں نے بمباری کی۔

یہ بھی پڑھیں : فلسطینی مزاحمت کے سامنے اسرائيل پسپا، غرب اردن کے الحاق کا منصوبہ ملتوی

جارح سعودی اتحاد کے جنگی طیاروں نے اسی طرح کل بروز بدھ بھی صنعاء کے جنوبی علاقے النھدین پر بھی بمباری کی۔

المیادین نے خبر دی ہے کہ سعودی اتحادی افواج کے جنگی جہازوں نے گزشتہ روز صنعاکے بین الاقوامی ہوائی اڈے کو نشانہ بناکر رن وے کو نقصان پہنچایا۔

صنعا ائیرپورٹ پر دوبار بمباری کی گئی، جبکہ صنعا کے علاقے ’’سعوان‘‘ اور ’’النہدین‘‘ پر بھی فضائی حملے کئے گئے۔ یمنی ذرائع کا کہناہے کہ سعودی اتحاد کے جنگی جہازوں نے ’’ذہبان‘‘ نامی شہرمیں ٹائربنانے والی کمپنی کو نشانہ بنایا۔

یہ بھی پڑھیں : شیخ زکزاکی کی رہائی کیلیئے علامہ مقصود ڈومکی کا عاشقان اہل بیتؑ کے نام کھلا خط

صوبہ صعدہ سے اطلاعات ہیں کہ وہاں کے مختلف علاقوں پر بھی فضائی حملے کئے گئے جس کے نتیجے میں متعدد نہتے یمنی شہری شہید یا زخمی ہوگئے۔

اسلامی مزاحتمی تحریک کے اعلیٰ رہنما نے سعودی اتحادی افواج کے فضائی حملوں پر رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ آل سعود سخت بوکھلاہٹ کا شکار ہے۔

انہوں نے کہا کہ آل سعود کو نہتے یمنی مسلمانوں کے خون کا حساب دینا ہوگا۔

واضح رہے کہ سعودی عرب، امریکہ اور اسرائیل کی مدد سے 2015 سے اب تک مسلسل نہتے یمنیوں پر بم برسا رہا ہے جس کے نتیجے میں ہزاروں یمنی شہید اور لاکھوں بے گھرہوچکے ہیں۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close