اہم ترین خبریںیمن

یمن، نہم کا علاقہ سعودی اتحاد کا قبرستان بن گیا، 2 ہزار فوجی قیدی، 400 ہلاک و زخمی

شیعت نیوز:مشرقی صنعا میں یمنی فوج اور رضاکار فورس کے خلاف سعودی اتحاد کی کاروائی شروع ہونے کے ایک ہفتے بعد یمنی فوج اور رضاکار فورس نے سعودی اتحاد کو کاری ضرب لگائی ہے۔

شائع ہونے والی تصاویر اور ویڈیوز سے پتہ چلتا ہے کہ سعودی اتحاد کو نہم کے محاذ پر شدید شکست کا سامنا کرنا پڑا ہے۔

رپورٹ میں بتایا گیا کہ گزشتہ ہفتے کے آغاز پر سعودی اتحاد نے اپنے حامی جنگجوؤں کے ساتھ صنعا پر قبضے کی کوشش شروع کی تھی اور نہم کے محاذ پر بہت زیادہ فوجیوں اور فوجی ساز و سامان جمع کر لیا تھا۔

اس کاروائی کا مقصد نہم کے پہاڑی علاقے پر قبضہ کرنا اور صنعا کے پہاڑی علاقے کے نزدیک اپنی پوزیشن مضبوط کرنا تھا لیکن اس آپریشن کا بھی عسیر کے آپریشن جیسا ہی حال ہوا جس میں سیکڑوں فوجی اسیر اور ہلاک و زخمی ہوئے تھے۔

اس دوران شائع ہونے والی تصاویر اور ویڈیوز میں سعودی اتحاد کی شکست فاش کی عکاسی ہوتی ہے۔ یمنی فوج اور رضاکار فورس نے سعودی اتحاد کی درجنوں بکتربند گاڑیوں اور ٹینکوں کو تباہ کر دیا۔ سڑک کے کنارے ان گاڑیوں اور ٹینکوں کی تصاویر دیکھی جا سکتی ہے جن میں آگ لگی ہوئی ہے۔

المیادین ٹی وی چینل اس آپریشن کے حوالے سے لکھا کہ اس آپریشن میں تقریبا 2000 افراد کو اسیر کیا گیا جبکہ 400 افراد ہلاک و زخمی ہوئے ہیں۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close