اہم ترین خبریںپاکستان

ایران سے آنے والے زائرین کو باقاعدہ منصوبہ بندی کے تحت متنازعہ بنایا جارہا ہے، یوسف جعفری

ان خیالات کا اظہارتحریک حسینی پاراچنار کے صدر علامہ یوسف حسین جعفری اور نائب صدر علامہ حاجی عابد حسین نے کورونا وائرس کی آڑ میں شیعان پاکستان کو بے جا تنگ اور پروپیگنڈےکے خلاف مشترکہ مذمتی بیان میں کیا۔

شیعت نیوز: کورونا وائرس کے حوالے سے احتیاط اور حفاظتی اقدامات کرنا واجب ہے، تاہم اس کی آڑ میں ایران سے آنے والے زائرین کو باقاعدہ منصوبہ بندی کے تحت متنازعہ بنایا جارہا ہے، اور ساتھ ہی ساتھ برادر اسلامی ملک ایران کو نشانہ بنایا جارہا ہے۔ ان خیالات کا اظہارتحریک حسینی پاراچنار کے صدر علامہ یوسف حسین جعفری اور نائب صدر علامہ حاجی عابد حسین نے کورونا وائرس کی آڑ میں شیعان پاکستان کو بے جا تنگ اور پروپیگنڈےکے خلاف مشترکہ مذمتی بیان میں کیا۔

یہ بھی پڑھیں: سعودیہ،چائنا،برطانیہ سے آنے والے مسافروں کی وجہ سے 22 کروڑ پاکستانیوں کی جان خطرے میں

علامہ یوسف جعفری نے کہا کہ کورونا وائرس نے پاکستان سمیت دنیا بھر کو متاثر کیا ہے۔ لیکن افسوس کی بات ہے کہ ہمیشہ اس قسم کے مواقع پر بعض قوتیں اپنے مزموم عزائم کی تکمیل کرتی ہیں۔ اور اس مرتبہ بھی کورونا کی آڑ میں ایران سے آنیوالے زائرین اور شیعان پاکستان کو بدنام کیا جارہا ہے، اور اسی طرح برادر اسلامی ملک ایران کی اس مشکل وقت میں کسی مدد کی بجائے متنازعہ بنایا جارہا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: سعودیہ عرب سے واپس آنے 2مسافرپاکستان میں کورونا وائرس کے پہلے جاں بحق قرار

علامہ حاجی عابد حسین نے کہا کہ چین سے کورونا وائرس شروع ہوا تھا، تاہم اب ہر کسی کی زبان پر ایران ہے، ایران سے آنے والے زائرین کو ایک ہی کمرے میں کیوں رکھا گیا۔؟ اور پھر اتنے دن تک ایک ہی جگہ بغیر کسی میڈیکل چیک اپ اور سکریننگ کے زائرین کو تنگ کیا گیا، یہ سب کچھ اس جانب اشارہ ہے کہ حکومت نے جان بوجھ کر ایسے حالات پیدا کئے۔ ان کا کہنا تھا کہ یہ کورونا وائرس امریکہ، اسرائیل اور برطانیہ کا مشترکہ منصوبہ ہے، جس کے ذریعے وہ اپنی شکست کا بدلہ لینا چاہتے ہیں اور اپنے مخالف ممالک کو تنہا کرنا چاہتے ہیں۔ ہمارے وزیراعظم ان سازشوں کے ہاتھوں میں کھیل کر رہے ہیں۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close