اہم ترین خبریںپاکستان

فسادی ملاطاہر اشرفی کی بحیثیت مشیر تعیناتی،عمران خان کی مردم شناسی اور میرٹ کی بالادستی کو سو توپوں کی سلامی، زید حامد

مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے صارفین اس اقدام کی کھل کرمذمت کررہے ہیں اور فیصلے کو ملکی سلامتی اور استحکام کیلئے بڑا خطرہ قرار دے رہے ہیں۔

شیعیت نیوز: پاکستان کے سب سے عوامی طور پر متنازعہ ، بدکرادر، بداخلاق، متعصب اور سعودی نوازدیوبندمولوی حافظ طاہر محمود اشرفی کی بحیثیت معاون خصوصی وزیر اعظم پاکستان برائے مذہبی ہم آہنگی تقرری پر سوال اٹھادیئے ہیں۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے پیغام میں پاکستان کے نامور دفاعی تجزیہ کار زید زمان حامد نے طاہر اشرفی کی وزیر اعظم کے معاون کے طور پر تعیناتی پر شدید الفاظ میں مذمت کرتےہوئے کہاکہ عمران خان کی مردم شناسی اور میرٹ کی بالادستی کو سو توپوں کی سلامی ۔

یہ بھی پڑھیں: سانحہ 30 ستمبر 1988 ڈیرہ اسماعیل خان 32 برس گزرنے کے باوجود یہ سانحہ آج بھی ہمارے دلوں میں زندہ و جاوید ہے

انہوں نے کہاکہ عمران خان نے سب سے بڑا شرابی ، فرقہ پرست فسادی ملا اپنا مشیر لگالیاہےپھر کہتے ہیں ہماری حکومت نہیں چلنے دیتے لوگ، سب سے بڑا مافیا تو آپ نے اپنے گرد جمع کیا ہواہے۔

زید حامد نے عمران خان کو مخاطب کرتے ہوئے کہاکہ سر یہ حرام چربی کا ڈرم اس منصب پر فائز ہوکر فتنہ وفساد برپا کرسکتا ہے، واضح رہے کہ آج وزیر ہاؤس سے ایک نوٹیفکیشن جاری ہواجس کے مطابق متحدہ علماءبورڈ پنجاب کے متنازعہ چیئرمین طاہر محمود اشرفی کو وزیر اعظم پاکستان عمران خان کا نمائندہ خصوصی برائے مذہبی ہم آہنگی مقرر کیا گیاہے۔

یہ بھی پڑھیں: متنازعہ شخصیت طاہر اشرفی وزیراعظم پاکستان کے نمائندہ خصوصی برائے مذہبی ہم آہنگی مقرر، شیعہ سنی علماءوعوام کا اظہار برہمی

اس نوٹیفکیشن کے منظرعام پر آنے کے بعد سوشل میڈیا پر شدید تنقید اور تشویش کا اظہار کیا جارہاہے، مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے صارفین اس اقدام کی کھل کرمذمت کررہے ہیں اور فیصلے کو ملکی سلامتی اور استحکام کیلئے بڑا خطرہ قرار دے رہے ہیں۔

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close