اہم ترین خبریںپاکستان کی اہم خبریں

ضلع کپواڑا میں بھارتی فوج کی ریاستی دہشت گردی، 2 کشمیری شہید

شیعت نیوز : مقبوضہ کشمیرمیں بھارتی مسلح افواج کے اہلکاروں نے ضلع کپواڑا میں فائرنگ کرکے دوجوانوں کو شہید کردیا۔

پورٹ کے مطابق کشمیری ذرائع کا کہنا ہے کہ ضلع کپواڑا میں ایل او سی کے نوگام سیکٹر میں نام نہاد سرچ آپریشن دوران مزید 2 کشمیری نوجوان شہید ہوگئے۔

کشمیر میڈیا سروس کے مطابق جنت نظیر وادی کے ضلع کپواڑا میں ایل او سی کے نوگام سیکٹر میں بھارتی فوج نے داخلی و خارجی راستوں کو بند کرکے سرچ آپریشن کیا، اس دوران مریضوں کے لیے ایمبولینس کو بھی داخل ہونے کی اجازت نہیں دی گئی۔

یہ بھی پڑھیں : شہید مدافع حرم قاسم سلیمانی کی ٹارگٹ کلنگ بھولیں گےنہ معاف کریں گے

کشمیری ذرائع نے خبر دی ہے کہ بھارتی فوج نے گھر گھر تلاشی کے دوران چادر و چار دیواری کے تقدس کو پامال کیا، بچوں اور بزرگوں کو ہراساں کیا اور نوجوانوں کو غیر قانونی طور پر گرفتار کرکے اپنے ہمرا لے گئے جن میں سے دو نوجوانوں کی تشدد زدہ لاشیں ملیں۔

بھارت نواز کٹھ پتلی انتظامیہ نے قابض بھارتی فوج کے ہاتھوں ماورائے عدالت قتل کو مقابلہ ظاہر کرتے ہوئے شہید ہونے والے نوجوانوں کو دہشت گرد ثابت کرنے کی ناکام کوشش کی تاہم اہل خانہ اور علاقہ مکینوں نے جھوٹ کا پردہ فاش کردیا اور بھارتی جارحیت کے خلاف شدید احتجاج کیا۔

قبل ازیں بھارتی فوج نے ایک ضعیف شخص کو کم سن نواسے کے سامنے گولی مارکر شہید کردیا تھا جب کہ گولیوں کی تڑتڑاہٹ سے سہما ہوا بچہ اپنے مردہ نانا کے سینے پر بیٹھ گیا اور روتے ہوئے انہیں اُٹھانے کی کوشش کر رہا تھا۔ اس منظر نے جہاں بھارت کا مکروہ چہرہ بے نقاب کیا وہیں عالمی ضمیر کو جھنجھوڑ کر رکھ دیا۔

واضح رہے کہ مودی سرکار نے مظلوم کشمیریوں کی نسل کشی کا سلسلہ تیز کردیا ہے، رواں برس بھارتی فوج کے ہاتھوں شہید ہونے والے نوجوانوں کی تعداد 10 سے تجاوز کر گئی ہے، گزشتہ برس 54 کشمیری نوجوانوں کو شہید کیا گیا جب کہ وادی بھر میں بنیادی انسانی حقوق معطل ہیں۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close