اہم ترین خبریںپاکستان

سعودی نواز لابی اور کالعدم وہابی جماعتوں کی تاریخی ذلت، ذلفی بخاری کے خلاف دائر عدالتی درخواست مسترد

جسٹس اطہر من اللہ نے کہا کہ آرٹیکل 245 کے لاگو ہونے کے بعد عدالت کے پاس آرٹیکل 199 کے تحت جوڈیشل کمیشن بنانے کا اختیار نہیں اور یہ وقت الزامات کا نہیں بلکہ کام کرنے کا ہے

شیعت نیوز: زائرین کی ایران سے پاکستان آمد اور زائرین سمیت سید زلفی بخاری کو پاکستان میں کورونا وائرس کے پھیلاؤ کا ذمہ دار قراردینے والی سعودی نواز لابی خصوصاً کالعدم تکفیری دہشت گرد جماعت سپاہ صحابہ /لشکر جھنگوی کے ارمانوں پر پانی پھرگیا اور انہیں بدترین ذلت اور شکست کا سامنا کرنا پڑگیا۔

یہ بھی پڑھیں: زائرین کی ایران سے واپسی، سعودی نواز لابی عمران حکومت اور پاک فوج کے خلاف سرگرم

کالعدم سپاہ صحابہ لشکر جھنگوی کے وکیل حافظ ملک مظہر جاوید ایڈووکیٹ کی جانب سےاسلام آباد ہائیکورٹ میں دائر وزیر اعظم کے مشیر برائے سندر پار پاکستانیز زلفی بخاری کےخلاف کورونا وائرس سے متاثرہ زائرین کو ایران سے پاکستان میں داخل کرنے اور پھر تفتان سے مختلف علاقوں میں منتقل کرنے کے جھوٹے الزام پر جوڈیشل کمیشن کے قیام کی استدعا مستردکردی ۔

یہ بھی پڑھیں: سکھر ، 100ملکی وغیر ملکی دیوبندی تبلیغیوں کی موجودگی، تبلیغی مرکز کو قرنطینہ میں تبدیل کردیا گیا

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ہائیکورٹ نے وزیر اعظم کے مشیر برائے سندر پار پاکستانیز سید زلفی بخاری کے خلاف دائر درخواست مسترد کر دی ہے۔وزارت برائے اوورسیز پاکستانیز کے مطابق عدالت نے تفتان سے آئے ہوئے پاکستانی زائرین کے معاملے پر جوڈیشل کمیشن تشکیل دینے کی استدعا کی سماعت کی۔ سماعت کے دوران حکومتی وکیل نے کہا کہ 23مارچ کو آرٹیکل 245 لگ چکا ہے لہٰذا عدالت کے پاس آرٹیکل 199 لگانے کا اختیار نہیں۔

یہ بھی پڑھیں: دو ساتھیوں کا کورونا ٹیسٹ مثبت آنے پرتبلیغی جماعت کی سرکاری عملے پر حملے کی کوشش

چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ جسٹس اطہر من اللہ نے کہا کہ آرٹیکل 245 کے لاگو ہونے کے بعد عدالت کے پاس آرٹیکل 199 کے تحت جوڈیشل کمیشن بنانے کا اختیار نہیں اور یہ وقت الزامات کا نہیں بلکہ کام کرنے کا ہے۔اسلام آباد ہائیکورٹ کے چیف جسٹس اطہر من اللہ نے ریمارکس دیے کہ اس وقت ملک کو بڑے بحران کا سامنا ہے، اختلافات بھلا کر اکٹھے ہو کر یہ جنگ جیتی جا سکتی ہے، آپس میں تقسیم ناہی آپ کے اور ناہی اس عدالت کے مفاد میں ہے، اس وقت اتفاق اور اتحاد قائم کرنے کی ضرورت ہے۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close